img 1614009838 4

پاکستان امسال اقوامِ متحدہ کے ماحولیاتی پروگرام کے اشتراک سے عالمی یومِ ماحولیات کی میزبانی کرے گا۔ ملک امین اسلم

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) معاونِ خصوصی‪ملک امین کا کہنا ہے کہ حکومتِ پاکستان موسمیاتی تبدیلی کے مسئلہ کے حل کے لیے پر عزم ہے، بلین ٹری سونامی پروگرام کے تحت ملک میں جنگلات کو بڑھانے کے ساتھ ساتھ تحفظ بھی فراہم کیا جائےگا،ہمارے لیے اعزاز کی بات ہے کہ ہم امسال عالمی یومِ ماحولیات کی میزبانی کر رہے ہیں اور ماحولیاتی مسائل کے حل کے لیے عالمی بحالی کی کوششوں میں باقی ممالک کے ساتھ تعاون کرے گا۔انہوں نے کہا کہ پاکستان نے موسمیاتی تبدیلی کے مسائل سے نمٹنے اور حیاتیاتی تنوع کے تحفظ سے متعلق قدرتی حل کے لیے ماحولیاتی نظام کی بحالی کے فنڈز کا بھی بھرپور آغاز کیا ہے۔انکا کہنا تھا کہ وزیرِ اعظم

 پاکستان عمران خان کی سر پرستی میں دنیا کی سب سے بہترین اور بڑی  شجرکاری مہم “ٹین بلین ٹری سونامی” جس کا دورانیہ ۵ سال ہے ، کے تحت ملک میں جنگلات کو بڑھانے کے ساتھ ساتھ تحفظ بھی فراہم کیا جائےگا۔ اس مہم میں جنگلات کے ساتھ ساتھ مینگروز کے تحفظ کے علاوہ شہری علاقوں جیسا کہ سکولوں، کالجوں، عوامی پارکوں اور گرین بیلٹس میں بھی پودے لگائے جائیں گے۔ملک امین کا کہنا تھا کہ  پاکستان نے موسمیاتی تبدیلی کے مسائل سے نمٹنے اور حیاتیاتی تنوع کے تحفظ سے متعلق قدرتی حل  کے لیے ماحولیاتی نظام کی بحالی کے فنڈز کا بھی بھرپور آغاز کیا ہے ۔۔معاونِ خصوصی برائے موسمیاتی تبدیلی ملک امین اسلم نے اس موقع پر کہا کہ “حکومتِ پاکستان موسمیاتی تبدیلی کے مسئلہ کے حل کے لیے پر عزم ہے ، جس کے لیے ٹین بلین ٹری سونامی پروگرام کے تحت، جو کہ ملک بھر میں  ۱ ہیکٹر سے زائد کے رقبہ پر محیط ہے، جنگل کو بحال کرنےکے ساتھ ساتھ بڑھائے گا۔ “‪ملک امین اسلم نے یہ بھی کہا کہ یہ ہمارے لیے اعزاز کی بات ہے کہ ہم امسال عالمی یومِ ماحولیات کی میزبانی کر رہے ہیں اور ماحولیاتی مسائل کے حل کے لیے عالمی بحالی کی کوششوں میں باقی ممالک کے ساتھ تعاون کریں گے۔‬عالمی یوم ماحولیات کا میزبان ہونے کی حیثیت سے پاکستان ماحولیاتی مسائل نمایاں کرے گااوراس متعلق ملکی اہم اقدامات کے متعلق معلومات اور ان کی عالمی سطح پر اہمیت و کردار پر روشنی ڈالے گا۔ انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان نے ملکی جنگلات کی بحالی میں بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کیا ہے اور ہمیں اس بات کی خوشی ہے کہ  پاکستان عالمی یومِ ماحولیات ۲۰۲۱ کی میزبانی کر رہا ہے اور تمام قوموں کی اقوام متحدہ کی بحالیِ ماحولیاتی نظام  کی صدی کے ذریعے ماحولیاتی نظام کے بگاڑ کی بحالی کی سربراہی بھی کرے گا۔اقوام متحدہ کی بحالیِ ماحولیاتی نظام کی صدی تباہ شدہ ماحولیاتی نظام، موسمیاتی مسائل، جانوروں کی  بہت سی اقسام کا تحفظ، خوراک، صاف پانی کی فراہمی اور ذریعہ معاش کی بہتری میں اضافہ کرنے کا ارادہ رکھتی ہے۔۔انہوں نے مزید کہا کہ ہمیں ، ضرورت کے مطابق بحالی کے نظام کو چلانے کے لیے مالی سرمایہ کاری اور مراعات بھی درکار ہیں تاکہ تحقیقات اور تعلیم و تربیت کے ذریعہ عوام میں آگاہی بیدار کی جا سکے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں