img 1613985311 9

جہانگیرترین سے ٹیلی فونک رابطہ۔۔سابق وزیراعظم نے اندرکی بات بتادی- روزنامہ اوصاف

اسلام آباد(روزنامہ اوصاف)سابق وزیراعظم سید یوسف رضا گیلانی نے کہا ہے کہ جہانگیرترین سے رابطہ کوئی رابطہ نہیں ہوا، میں عمران خان کاترجمان نہیں مگر بظاہر نظر آرہا ہےکہ اسٹیبلشمنٹ مکمل نیوٹرل ہے ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے مولانافضل الرحمن سے ملاقات کے بعد پریس کانفرنس کے دوران میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔یوسف رضا گیلانی نے کہاکہ مولانا فضل الرحمن سے کچھ دن پہلے سے ملاقات کرنا چاہ رہا تھا تاہم ان کی مصروفیات کے باعث ملاقات میں کچھ

تاخیر ہوئی اور آج پی ڈی ایم سربراہ مولانا فضل الرحمن سے اہم ملاقات ہوئی ،میں پی ڈی ایم کا بے حد مشکور ہوں اور ان کے قائدین کا مشکور ہوں جنہوں نے مجھ پر اعتماد کرتے ہوئے مجھے سینیٹ الیکشن کیلئے اپنا متفقہ امیدوار چنا ہے ، میں پہلے بھی نیشنل اسمبلی میں متفقہ وزیراعظم کیا تھا اور اس وقت بھی اپوزیشن کا مشکور تھا کہ انہوں نے مجھے اعتماد کا ووٹ دیا تھا اور آج بھی ہم نے اپنی مہم شروع کی ہے جس کا بہت اچھا رسپانس مل رہا ہے اور یہ جو فتح ہو گی جمہوری قوتوں
کی فتح ہوگی ۔جہانگیرترین سمیت دیگر رہنمائوں سے رابطوںاور سینیٹ میں حکومتی و اپوزیشن کے ممبران کے فرق کے سوال پر انہوں نے کہاکہ آپ کو کس نے کہا دس سے بارہ سیٹوں کا فرق ہے ؟اس پر مولانا فضل ا لرحمن فوری بول پڑے اور کہاکہ دس سے بارہ ممبران کا فرق ان کو نہیں حکومت کوہوگا۔یوسف رضا گیلانی نے کہاکہ ضمنی الیکشن میں جو پی ڈی ایم نے پرفارمنس دی ہے وہ سینیٹ الیکشن میں بھی دے گی ۔انہوں نے کہا کہ میری جہانگیرترین سے ٹیلی فونک رابطہ یا ملاقات نہیں ہوگی البتہ وہ میرے عزیز ہیں لہذا ان کو کہنے کی ضرورت بھی نہیں پڑے گی ۔انہوںنے کہاکہ میں خان صاحب کاترجمان نہیں ہوا تاہم جو بظاہر مجھے نظر آرہا ہے اسٹیبلشمنٹ
مکمل نیوٹرل ہے ۔مسلم لیگ ن نے مجھے ووٹ دیا اور مجھے کامیاب بھی کروایا اور اب بھی مسلم لیگ (ن) اپوزیشن میں اکثریتی پارٹی ہے اس لئے جو ماضی ہے وہ گزر گیا اب ہمیں حال کی بات کرنی چاہیے۔‎

اپنا تبصرہ بھیجیں